imran khan 95

بتائیں! کرپٹ لوگوں سے کیسے این آراو کرلوں؟ وزیراعظم کا اتحادیوں سے سوال

اسلام آباد : وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ سینیٹ جیت گئے تو ہماری آواز اور قانون سازی ہوگی، بتائیں! کرپٹ لوگوں سے کیسے این آراو کرلوں؟ عدلیہ کو بھی علم ہے کہ ووٹ چوری ہوتے ہیں، کرپشن کی وجہ سے اپوزیشن سے ہاتھ نہیں ملایا تھا۔ وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت ارکان اسمبلی کے اعزاز میں ظہرانے کی اندرونی کہانی کے مطابق وزیراعظم کے ظہرانے میں تحریک انصاف، مسلم لیگ (ق)، جی ڈی اے، بلوچستان عوامی پارٹی، جمہوری وطن پارٹی اور ایم کیو ایم کی قیادت شریک ہوئی۔

ایک گھنٹے پر محیط ظہرانے کی تقریب میں وزیراعظم انتہائی خوشگوار موڈ میں نظر آئے۔ ظہرانے میں سینیٹ میں انتخابی امیدوار حفیظ شیخ اور فوزیہ ارشد بھی شریک ہوئیں۔

پی ٹی آئی ارکان نے یوسف رضا گیلانی کے خط کو مسترد کیا اور خط کا جواب تحریر کیا جس پر سب نے دستخط بھی کیے۔ وزیراعظم عمران خان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمارا مقابلہ چوروں کے ساتھ ہے، جیت ہماری ہی ہوگی۔

سینیٹ میں کم نمائندگی کی وجہ سے ہماری مئوثر آواز نہیں تھی۔ جب سینیٹ میں ہمارے سینیٹرز آئیں گے تو سینیٹ میں ہماری آواز بھی ہوگی اور قانون سازی بھی ہوگی۔ میں نے کرپشن کی وجہ سے اپوزیشن سے ہاتھ نہیں ملایا۔ آپ بتائیں کرپٹ لوگوں سے کیسے این آراو کر لوں؟ عدلیہ کو بھی علم ہے کہ ووٹ چوری ہوتے ہیں۔ سینیٹ انتخابات میں شفافیت لانے کی پوری کوشش کی تھی۔

ہم ہربحران میں سرخرو ہوئے ہیں۔ معاشی بحران کی وجہ قرضوں میں جکڑا ملک ملنا ہے۔ اسی طرح وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چودھری نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے پاس 181نمبرز ہیں، امید ہے کل تعداد مزید بڑھ جائے گی، اس لیے ہمارے دونوں امیدوارحفیظ شیخ اور فوزیہ الیکشن جیت جائیں گے، الیکشن کو شفاف بنانا بھی الیکشن کمیشن کی ذمہ داری ہے، سندھ کے واقعات کا نوٹس لیا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں