ASI 73

کشمور زیادتی کیس ، بہادر پولیس افسر کو انعام و کرام سے نواز دیا گی

کراچی :صوبہ سندھ کے شہر کشمور میں 4 سالہ بچی کو درندوں سے چھڑانے والے اے ایس آئی محمد بخش کو انعام و کرام کی سے نوازے جانے کا سلسلہ جاری ہے ، کراچی کے شہریوں کی طرف سے بھی بہادر پولیس افسر کو بے پناہ تحائف دیے گئے ہیں۔ میڈیا ذرائع کے مطابق کراچی ویسٹ زون پولیس نے اے ایس آئی محمد بخش کے اعزاز میں ایک شاندار تقریب منعقد کی ، جس میں پارلیمنٹیرین ، تاجروں ، سیاسی و سماجی رہنماؤں ، پولیس ملازمین اور دیگر شہریوں کی ایک بڑی تعداد شریک ہوئی ، تقریب میں موجود شہریوں نے پولیس افسر اور ان کے اہل خانہ کو دل کھول کر تحائف دیے ، اس دوران تقریب میں موٹر سائیکل کے علاوہ ملبوسات اور دیگر اشیاء کے بھی ڈھیر لگ گئے۔
بتایا گیا ہے کہ اے ایس آئی محمدف بخش کی بچی کی شادی کیلئے تاجروں کی ایسوسی ایشن نے فرنیچر اور جہیز دینے کے اعلانات بھی کیے جب کہ اس تقریب میں شہریوں نے محمد بخش کو 13 لاکھ 20 ہزار روپے سے زائد کے نقد انعامات بھی دیے ، اس موقع پر ڈی آئی جی ویسٹ زون عاصم قائم خانی نے تقریب کے اختتام پر جمع کیے گئے تحائف اور نقد انعامات اے ایس آئی اور ان کے اہل خانہ کو پیش کیے جن میں کیش انعامات سے بھرا ایک بریف کیس بھی شامل تھا۔
دوسری طرف بہادر اے ایس آئی محمد بخش کیلئے تمغہ شجاعت اور بیٹی کی کیلیے تمغہ امتیاز کی سفارش کردی گئی ، آئی جی سندھ کی جانب سے کشمور زیادتی کیس کے ملزمان کو گرفتار کرنے والے بہادر پولیس افسر اور بیٹی کیلئے 20 لاکھ روپے انعام کا بھی اعلان کیا گیا ، تفصیلات کے مطابق کشمور میں 4 سال معصوم بچی اور اس کی ماں کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے والے مجرمان کو اپنی بیٹی کے ذریعے گرفتار کروانے والا پولیس اے ایس آئی محمد بخش اپنی بہادری اور فرض شناسی کی وجہ سے پورے ملک کا ہیرو بن چکا ہے ، پیر کے روز محمد بخش کے اعزاز میں ایک خصوصی تقریب کا انعقاد کیا گیا جہاں آئی جی سندھ اور ترجمان سندھ حکومت مرتضیٰ وہاب نے پولیس اے ایس آئی کا استقبال کیا ، تقریب کے دوران آئی جی سندھ نے محمد بخش کیلئے 20 لاکھ روپے انعام کا اعلان کرتے ہوئے اس بہادر و فرض شناس اے ایس آئی کیلئے تمغہ شجاعت اور اس کی بیٹی کیلئے تمغہ امتیاز کی سفارش کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں