90

بیٹی کے انتقال کو ایک سال ہونے پر آصف علی نے جذباتی پیغام شیئر کر دیا

پاکستان کرکٹ ٹیم کے جارح مزاج مڈل آرڈر بیٹسمین آصف علی کی ننھی بیٹی کی وفات کو ایک سال گزر گیا ہے جس کا ذکر انہوں نے سوشل میڈیا پر کیا تو ان کے مداح افسردہ ہو گئے۔تفصیلات کے مطابق آصف علی کی کینسر کے مرض میں مبتلا بیٹی 20 مئی 2019ء کو امریکا میں دورانِ علاج وفات پا گئی تھیں۔ نور فاطمہ کے کینسر کے بارے میں خبریں گزشتہ برس پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کے چوتھے ایڈیشن کے دوران اس وقت سامنے آئی تھیں جب آصف علی کی ٹیم اسلام آباد یونائیٹڈ کے ہیڈ کوچ ڈین جونز نے پریس کانفرنس کے دوران اس بارے میں بات کی تھی اور آبدیدہ ہو گئے تھے۔بعد ازاں خود آصف علی نے سوشل میڈیا ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں بتایا تھا کہ ان کی بیٹی کو کینسر کا موذی مرض لاحق ہے اور وہ چوتھی سٹیج پر ہے جسے علاج کیلئے امریکا لے جایا جا رہا ہے جبکہ خود بیٹسمین اس دوران مسلسل کرکٹ کھیلنے میں مصروف رہے جس پر ہر کوئی ان کی ہمت اور حوصلے کی داد بھی دیتا رہا۔دو سالہ نور فاطمہ کا کینسر چوتھی سٹیج پر تھا جب انہیں علاج کیلئے امریکا منتقل کیا گیا تھا اور آصف علی اس وقت پاکستانی ٹیم کے ہمراہ انگلینڈ میں موجود تھے جب ان کی بیٹی وفات پا گئی تھی اور اس کی یاد آج بھی کرکٹر کے دل میں تازہ ہے جس کا اظہار انہوں نے اپنی بیٹی کی پہلی برسی کے موقع پر کیا۔آصف علی نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر اپنی بیٹی نور فاطمہ کی تصویر شیئر کی اور لکھا کہ آج میری بیٹی کو اللہ کے پاس گئے ایک سال ہو گیا، ایسے جیسے کل کی بات تھی، اللہ تعالیٰ میری بیٹی کو جنت کا پھول بنائے، آمین۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں