50

حکومت نے فیڈرل بورڈ آف ریونیو کو ختم کر کے نیا ادارہ بنانے کا فیصلہ کر لیا

اسلام آباد : موجودہ حکومت نے فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کو ختم کر کے نیا اداراہ بنانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق حکومت نے تاجروں، کاروباری افراد اور شہریوں کی شکایات کا حل ڈھونڈنے کی کوشش میں فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کو ختم کرکے نیا ادارہ بنانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ نئے ادارے کا نام ”پاکستان ریونیو اتھارٹی” ہوگا۔کسٹم اور انٹرنل ریونیو کے علیحدہ علیحدہ اور خود مختار بورڈ ہوں گے۔دونوں بورڈز خود مختار حیثیت میں کام کریں گے۔ جبکہ وزیر اعظم عمران خان نے بھی اس حوالے سے گرین سگنل دے دیا ہے۔ یاد رہے کہ نئے ٹیکسز کے نفاذ اور شناختی کارڈ کی شرط سے متعلق حکومتی پالیسی کے خلاف تاجر برادی نے ملک گیر ہڑتال دی تھی۔

۔تاجر برادری کی ہڑتال کے باعث کراچی، پشاور، لاہور، اسلام آباد، وہاڑی، گوجرانوالہ، حافظ آباد اور مظفر گڑھ سمیت چھوٹے بڑے شہروں میں تمام مارکیٹیں اور کاروباری مراکز بند رہے تھے۔ تاجر برادری کی جانب سے ملک بھر کی مارکیٹوں اور تجارتی مراکز میں احتجاج بھی کیا گیا، احتجاج کے باعث شہریوں کو مشکلات کا سامنا رہا تھا۔ جس کے بعد تیس اکتوبر کو تاجروں اور حکومتی ٹیم کے درمیان جاری مذاکرات کامیاب ہونے کے بعد تاجروں نے ہڑتال ختم کرنے کا اعلان کیا تھا۔تاجر برادری نے ٹیکسز پر بھی تحفظات کا اظہار کیا تھا۔ آل پاکستان انجمن تاجران کی دو روزہ ہڑتال سے ملکی خزانے کو اربوں روپے فی یومیہ نقصان اُٹھانا پڑا تھا۔ ہڑتال کے باعث ملکی معیشت کو 20 سے 25 ارب روپے کے نقصان کا تخمینہ لگایا گیا جس کے بعد حکومت نے تاجروں اور کاروباری حضرات کی شکایات کو دور کرنے کے لیے فیڈرل بورڈ آف ریونیو کو ختم کر کے نیا ادارہ بنانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں