kHAWAJHA aSIF 22

خواجہ آصف کیس ، چاول کی بوگس ایکسپورٹ سے کروڑوں کے فراڈ کا انکشاف

اسلام آباد : مسلم لیگ ن کے رہنام خواجہ آصف کے کیس میں چاول کی بوگس ایکسپورٹ سے کروڑوں کے فراڈ کا انکشاف ہوگیا ، مشیر پارلیمانی امور ڈاکٹر بابر اعوان نے کہا کہ چینی والا اور پاپڑ والا تو سنا ہوگا، اب میں بتارہا ہوں چاول والا ، بغیرکسی بزنس کےچاول کی بوگس ایکسپورٹ سےکروڑوں کافراڈ کیاگیا ، جہاں 10 کروڑ روپے پہلے ادھر سے گئے پھر منی لانڈرنگ سے ادھر آئے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور وزیر اطلاعات سینیٹر شبلی فراز کے ہمراہ پریس کانفرنس میں ڈاکٹر بابر اعوان نے کہا کہ مریم نواز نے کہا کہ ان کے والد کو اقامہ میں دی گئی سزا جائز نہیں ہے، مزدوراقامہ لیتےہیں وہ روزگار کےحاصل آمدنی ملک بھیجتے ہیں ، اقامہ ایک رہائشی اجازت نامے کوکہتےہیں ، ایک محنت کش اقامہ ہےایک سیاسی اقامہ ہے، اقامہ ملنے کے بعد آپ کو بیرون ملک اکاوَنٹ کھولنے کی اجازت مل جاتی ہے۔
انہوں نے کہا کہ اقامہ کے ذریعےمنی لانڈرنگ کی جاتی ہے ، کچھ پیسےباہرنکال دیتےہیں انہیں آف شورکمپنی میں رکھتےہیں ، منی لانڈرنگ سےناجائز کمائی باہر بھیجےجاتے ہیں پھر واپس ملک میں منگوالیے جاتے ہیں ، حدیبیہ پیپرملز میں اسحاق ڈار نے بھی یہی طریقہ کار کو استعمال کیا ، جب کہ نواز شریف اور خواجہ آصف جیسےلوگوں کواقامہ لینےکی ضرورت کیوں پیش آتی ہے ، اعلیٰ ترین عہدیدارجب اقامہ لیتےہیں تو تنخواہ بینک ٹوبینک ملتی ہے ، لوتھاکےکیس میں یہی طریقے کاراستعمال ہوا۔

وفاقی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ نیب خود مختار ادارہ ہے، نیب جس قانون کےتحت کام کررہا ہےوہ ہم نے نہیں بنایا، نیب کوپی ٹی آئی کےساتھ جوڑنا نامناسب اورغیرفطری بات ہے ، خواجہ آصف کو اپنی صفائی پیش کرنےکاموقع ملے گا اور ملا بھی ہے لیکن خواجہ آصف نیب کومطمئن نہیں کرپائے، خواجہ آصف منی لانڈرنگ اورآمدن سےزائداثاثوں کا جواب نہیں دےسکے ، اگر خواجہ آصف منی ٹریل دے دیتے تو گرفتاری کی نوبت نہ آتی۔

انہوں نے کہا کہ 2بڑی جماعتوں نے فیٹف پر قانون سازی پر بلیک میلنگ کی کوشش کی، اپوزیشن جماعتیں اپنے ذاتی مفاد کیلئے نیب قوانین میں ترامیم کی خواہاں تھیں، ان کی جانب سےنیب میں 34 ترامیم پیش کی گئیں،این آراوریلیف اور بچاوَ کا پروگرام تھا، کوئی سوال پوچھا جاتا ہے تو کہتے ہیں اداروں کا گھیراؤ کریں گے ، این آر اوکو یہ نجات کاراستہ سمجھتے تھے، نیب کارروائی کرتا ہے تو کہتے ہیں انتقامی کارروائی ہے۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ عمران خان کوعدالت نے صادق اورامین ڈکلیئرکیا، خود کہنے سے کوئی بھی صادق اورامین نہیں بن جاتا، احتساب کے عمل سے عمران خان اور تحریک انصاف پیچھے نہیں ہٹے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں