57

شہباز شریف کو 2 ہفتوں کا پیرول دیا جائے ، مسلم لیگ ن کا مطالبہ مسلم لیگ ن کے صدر قائد حزب اختلاف ہیں اور پورے ملک سے لوگوں نے تعزیت کے لیے آنا ہے ، رانا ثناءاللہ کی میڈیا سے گفتگو

شہباز شریف کو 2 ہفتوں کا پیرول دیا جائے ، مسلم لیگ ن کا مطالبہ
مسلم لیگ ن کے صدر قائد حزب اختلاف ہیں اور پورے ملک سے لوگوں نے تعزیت کے لیے آنا ہے ، رانا ثناءاللہ کی میڈیا سے گفتگو

لاہور : مسلم لیگ ن نے سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف کو 2 ہفتوں کے لیے پیرول پر رہا کرنے کا مطالبہ کردیا ، رانا ثناءاللہ نے کہا ہے کہ شہباز شریف قائد حزب اختلاف ہیں اور پورے ملک سے لوگوں نے تعزیت کے لیے آنا ہے ، اس لیے ہمارا مطالبہ ہے کہ شہباز شریف کو دو ہفتوں کا پیرول دیا جائے۔تفصیلات کے مطابق میڈیا نمائندوں سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ حکومت کسی کے جنازے پر سیاست نہیں بلکہ سنجیدگی کا مظاہرہ کرے ، افسوس ناک بات یہ ہے کہ تاحال شہباز شریف اور حمزہ کو پیرول پر رہا نہیں کیا گیا جب کہ شہباز شریف قائد حزب اختلاف ہیں اور ان کے پاس پورے ملک سے لوگوں نے تعزیت کے لیے آنا ہے۔
سابق وزیر قانون پنجاب نے کہا کہ 30 نومبر کو ملتان میں پی ڈیم ایم کا جلسہ ضرور ہو گا اور اس سے پہلے نواز شریف اور شہباز شریف کی والدہ کی تدفین کا عمل مکمل کر لیا جائے گا۔
قابل زکر بات یہ ہے سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف اور ان کے صاحبزادے حمزہ شہباز کو جمعہ کو پیرول پر رہا کیے جانے کا امکان ہے ، مسلم لیگ ن نے ماڈل ٹاوَن اور رائیونڈ کے بعد ایئر پورٹ تک رسائی کا مطالبہ کردیا ، لاہور ضلعی انتظامیہ نے مسلم لیگ ن کو شہباز شریف اور حمزہ شہباز کی پرول پر رہائی سے متعلق آگاہ کردیا ہے ، جس پر ن لیگ نے ان کی ماڈل ٹاوَن اور رائیونڈ کے بعد ایئر پورٹ تک رسائی مانگ لی ، اس سلسلے میں کہا گیا ہے کہ شہباز شریف اور حمزہ شہباز ایئرپورٹ سے میت وصول کرنا چاہتے ہیں اس لیے ضروری ہے کہ انہیں ایئرپورٹ تک بھی رسائی دی جائے ، ضلعی انتظامیہ نے ن لیگ کی درخواست پر اجازت کے لیے وقت مانگ لیا۔

اس سے پہلے پنجاب کابینہ نے اپوزیشن لیڈر شہبازشریف اور ان کے صاحبزادے حمزہ شہباز کی 5 روز کیلئے پیرول پر رہائی کی منظور ی دے دی ، محکمہ داخلہ نے تھروسرکولیشن کابینہ سے منظوری لی، مسلم لیگ ن نے پیرول پر دوہفتے کی رہائی کیلئے درخواست دی تھی ، ن لیگ کی قیادت نے پارٹی صدر میاں شہبازشریف اور اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز کی پیرول پردوہفتے رہائی کیلئے درخواست دی تھی جس پر دونوں کی پیرول پر رہائی بیگم شمیم اختر کے انتقال پر دی جارہی ہے۔
محکمہ داخلہ پنجاب نے اس حوالے سے واضح کیا تھا کہ وہ صرف 12گھنٹے کیلئے رہائی دے سکتا ہے، اس سے زیادہ پیرول پر رہائی دینے کااختیار وزیراعلیٰ پنجاب کے پاس ہے جس پر محکمہ داخلہ نے وزیراعلیٰ پنجاب کو ایک سرکولیشن بھیجا، وزیراعلیٰ نے سمری پنجاب کابینہ کو بھجوائی، تاہم پنجاب کابینہ نے وزیراعلیٰ کی سمری پر فیصلہ کرتے ہوئے شہبازشریف اور حمزہ شہباز کی 5 روز کیلئے پیرول پر رہائی کی منظور ی دے دی ، پیرول پر رہائی کا عمل میت پاکستان پہنچنے پر شروع ہوجائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں