NAWAZ SHARIF AND MARRYAM NAWAZ 53

مریم نواز نے میاں نوازشریف کو وطن واپس آنے سے روک دیا

لاہور: پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہ میاں نوازشریف کو وطن واپس آنے سے روک دیا ہے، میاں صاحب سے کہا کہ یہ ظالم اور انتقام میں اندھے لوگ ہیں، ان سے کسی بھی قسم کی انسانیت کی توقع نہیں۔ انہوں نے ٹویٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ میاں صاحب کے سر سے ماں کا دعاؤں بھرا سایہ اٹھ گیا۔
دادی کے انتقال کی خبر مجھے فون سروسز معطل ہونے کی وجہ سے دو گھنٹے تاخیر سے ملی جس کے بعد میں فورا لاہور کی لیے روانہ ہوگئی۔ میرے والد اور گھر والے بار بار رابطے کی کوشش کرتے رہے مگر رابطہ نہ ہو سکا۔ انہوں نے کہا کہ کسی حکومتی شخص میں اتنی انسانیت نہیں تھی کہ مجھ تک دادی کی وفات کی اطلاع پہنچا دیتے۔ میں نے میاں صاحب کو درخواست کی ہے کہ بالکل واپس نا آئیں۔
یہ ظالم اور انتقام میں اندھےلوگ ہیں جن سے کسی بھی قسم کی انسانیت کی توقع نہیں۔ واضح رہے سابق وزیراعظم نوازشریف اور شہبازشریف کی والدہ بیگم شمیم اختر لندن میں انتقال کرگئی ہیں، بیگم شمیم اختر اپنے بیٹے نوازشریف کے پاس مقیم تھیں، بیگم شمیم اختر 15فروری 2020ء کو لندن گئی تھیں، نوازشریف اور شہبازشریف کے والد میاں شریف کا انتقال 2004ء میں سعودی عرب میں ہوا تھا۔
مریم نوازکو ان کی دادی بیگم شمیم اخترکے انتقال کی خبر پشاور میں پی ڈی ایم کے جلسے کے دوران ملی، جہاں پر مریم نواز نے انتہائی مختصر کہا کہ میں آج آپ لوگوں سے بات کرنا چاہتی تھی لیکن مجھے ابھی اطلاع ملی ہے کہ لندن میں میری دادی انتقال کرگئی ہیں، میری دادی اللہ کے پاس چلی گئی ہیں، اس لیے میں آج جلسے میں خطاب نہیں کرسکتی، میں آپ سے درخواست کرتی ہوں کہ میری دادی کے درجات کی بلندی کیلئے دعا کردیں، جبکہ میاں نوازشریف بیمار ہیں ان کی جلد صحتیابی کیلئے دعا کردیں۔
دوسری جانب قائد ن لیگ نوازشریف اور شہبازشریف کی والدہ کے انتقال پر وزیراعظم عمران خان، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ، سابق صدر آصف زرداری ، بلاول بھٹو، مولانا فضل الرحمان، چودھری برادران سمیت دیگر سیاسی و سماجی اور حکومتی شخصیات نے اظہار تعزیت کیا ہے۔اسی طرح پنجاب حکومت نے شہباز شریف اور حمزہ شہباز کو پے رول کر رہا کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ وزیرجیل خانہ جات فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ درخواست آنے پر پیرول پر فوری رہائی کی اجازت دی جائے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں