74

وقار یونس نے قومی ٹیم کی ناکامی کی وجوہات اور مستقبل کا لائحہ عمل بتا دیا

وقار یونس نے قومی ٹیم کی ناکامی کی وجوہات اور مستقبل کا لائحہ عمل بتا دیا

لاہور: قومی کرکٹ ٹیم کے بولنگ کوچ وقار یونس کا کہنا ہے کہ کورونا کے مسائل کی وجہ سے نیوزی لینڈ کا دورہ بہت مشکل رہا، جس طرح کھلاڑی پر فارم کرنا چاہتے تھے نہیں کر پائے، ہماری توجہ اب ورلڈ کپ پر ہے۔

تفصیلات کے مطابق میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وقار یونس نے کہا کہ میں کسی چیز کے پیچھے چھپنے نہیں آیا ہوں، جو مشکلات ہیں ان سب کا جواب دوں گا، پہلا ٹیسٹ میچ اچھا تھا، دوسرے میں میں کیچ ڈراپ ہوئےم بولرز نے ان مشکلات میں اچھا پرفارم کیا، باقی بولرز نے بھی کارکردگی بہتر بنائی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ساری مشکلات کے بعد بھی سب نے اچھا پرفارم کیا، چاہتا ہوں پاکستان کی ٹیم بھی جارحانہ ہو، ہم سب پاکستان کی بہتری کے لیے کام کرتے ہیں اور کریں گے، دورے کے موقع پر 14دن قرنطینہ آسان نہیں، جتنی تیاری ہونی چاہیے تھی وہ نہ ہوسکی، حالات کے باعث جتنی تیاری کرنی چاہیے تھی وہ نہیں تھی۔

مصباح الحق نے قومی ٹیم کی ناکامی کی ذمے داری کورونا پر ڈال دی

میڈیا سے گفتگو میں بولنگ کوچ نے کہا کہ یہ بات غلط ہے کہ میں اپنی ٹیم کو چھوڑکر آگیا، پچھلے 7ماہ سے فیملی سے دور تھا، پی سی بی سے اجازت کے بعد دوسرے ٹیسٹ کےدوران فیملی کے پاس آیا، دنیا میں صرف کرکٹ ہی نہیں اور بھی ضروری کام ہوتے ہیں، محمدعامر بہت اچھا کھلاڑی ہے، محمد عامر کی واپسی کیلئے میں سب سے لڑا تھا۔

وقار یونس کا مزید کہنا تھا کہ نئی سلیکشن کمیٹی سے مشورہ کریں گے کہ کیا ہونا چاہیے کیا نہیں، جو بھی ہوگا پاکستان کی بہتری کے لیے ہوگا، میری توجہ اپنے کام پر ہے، کرکٹ میں ہارجیت ہوتی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں