TIK TOK 20

ٹک ٹاک کا شوق سکیورٹی گارڈ کے لیے جان لیوا ثابت ہوا

کراچی : ٹک ٹاک کے شوق نے سکیورٹی گارڈ کی جان لے لی۔ تفصیلات کے مطابق مذکورہ واقعہ کراچی کے علاقہ گلستان جوہر میں پیش آیا جہاں سیکیورٹی گارڈ سر پر پستول رکھ کر ٹک ٹاک ویڈیوبنارہا تھا کہ اچانک گولی چل گئی، جس کے نتیجے میں وہ موقع پر ہی جاں بحق ہوگیا۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ پاکستان میں ٹک ٹاک کے شوقین افراد کی تعداد لاکھوں میں ہے جو اپنی ویڈیو بنا کر ٹک ٹاک پر اپ لوڈ کرتے ہیں، اس دوران ہزاروں نوجوان خطرناک انداز میں ویڈیو بنا کر ایپ پر ڈاؤن لوڈ کرتے ہیں جس کے باعث گزشتہ ایک سال کے دوران درجنوں نوجوان اپنی زندگی کی بازی ہار چکے ہیں۔
ٹک ٹاک کی وجہ سے اس سے پہلے بھی کئی واقعات سننے میں آ چکے ہیں۔ رواں ماہ ہی خیر پور میں ٹک ٹاک ویڈیو بنانے سے روکنے پر نوجوان لڑکی نے اپنے ہی گھر کو آگ لگا دی تھی۔
لڑکی نے والدین کی جانب سے روکے جانے کے بعد لڑکی نے یہ قدم اٹھایا ۔ لڑکی کے والد عزیز احمد خلجی نے اپنی ہی بیٹی کیخلاف ایف آئی آر درج کروائی، ایف آئی آر میں عزیز احمد نے مؤقف اپنایا کہ اس کی بیٹی نے اس کے گھر کو آگ لگا دی ہے، بیٹی کو ٹک ٹاک ویڈیوز بنانے سے روکا، جس پر اس نے غصے میں آ کر گھر کو آگ لگا دی ۔

پولیس نے ایف آئی آر درج کرنے کے بعد لڑکی کو حراست میں لے کر خواتین پولیس اسٹیشن منتقل کردیا تھا۔قبل ازیں ڈسکہ میں ایک انتہائی دلچسپ اور عجیب و غریب واقعہ پیش آیا تھا جہاں گورے چٹے ٹک ٹاکر نے کالک مل کر ایک غریب شخص کا روپ دھار لیا تھا۔ لڑکے کو دیکھ کر کوئی بھی یقین نہیں کر سکتا تھا کہ حقیقت میں اس کی رنگت اتنی صاف ہے۔ لیکن منہ پر کالک مل کر رنگ کالا کر کے بھیک مانگنے والا لڑکا زیادہ دیر لوگوں کو بے وقوف نہ بنا سکا اور پٹرولنگ پولیس کے شنکجے میں آ گیا۔
پولیس نے بتایا کہ منہ پر سیاہی لگا کر بھیک مانگنے والے گداگر کی جیب سے پاکستانی کرنسی، ڈالر ریال اور پاؤنڈ برآمد ہوئے ہیں۔پولیس نے یہ بھی بتایا کہ لڑکے کو حراست میں لینے کے بعد چہرہ دھونے کے لیے کہا گیا۔ چہرہ دھونے پر کالی رنگ والا لڑکا سفید رنگ والا نکل آیا، لڑکے کو اصل روپ میں دیکھ کر پولیس بھی حیران رہ گئی۔پولیس اہلکاروں کا کہنا ہے کہ نوجوان عرصہ دراز سے بھکاری کا روپ دھار کر شہریوں کو لوٹ رہا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں