78

پولیس حراست میں طالب علم کی ہلاکت: جوڈیشل مجسٹریٹ انکوائری افسر مقرر

پشاور: پولیس حراست میں ساتویں جماعت کے طالب علم کی ہلاکت کے کیس کی تحقیقات کے لیے جوڈیشل مجسٹریٹ کو انکوائری افسرمقرر کردیا گیا۔

ذرائع کے مطابق شاہ زیب کے سر، کمر، ہاتھ اور انگوٹھے پر زخم کے نشانات پائے گئے تھے جس کے بعد وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے واقعے کی جوڈیشل انکوائری کاحکم دیاتھا۔

اس معاملے پرتحقیقات کے لیے جوڈیشل مجسٹریٹ کو انکوائری افسرمقرر کیا گیا ہے جو 15 روز میں اپنی رپورٹ جمع کرائے گا۔

خیال رہے کہ ساتویں جماعت کے طالب علم کو دکانداروں سے تلخ کلامی اوراسلحہ تاننے پرگرفتار کیا گیا تھا جب کہ پولیس کا دعویٰ ہے کہ اس نے پھندا ڈال کر خود کشی کی۔

دوسری جانب مقتول کے والد نے بیٹے کو تشدد کر کے قتل کرنے کا الزام عائد کیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں