PDM Politics 147

پی ڈی ایم کو کمزور کرنے کی حکمت عملی تیار ، وزراء کو اہم ٹاسک مل گئ

اسلام آباد: حکومت مخالف تحریک چلانے والے پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ پر مشتمل اپوزیشن جماعتوں کے اتحاد کو کمزور کرنے کی حکمت عملی تیار کرلی گئی۔ میڈیا ذرائع کے مطابق اس حوالے سے وزراء اور حکمراں جماعت تحریک انصاف کی دیگر سیاسی شخصیات کو اہم ٹاسک سونپ دیے گئے ہیں ، ان میں سے پی ڈی ایم سربراہ مولانا فضل الرحمان کی جماعت جمعیت علماء اسلام ف کو کمزور کرنے کی ذمہ داری اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر اور وزیر دفاع پرویز خٹک کو دی گئی ہے اس کے علاوہ گورنر پنجاب چوہدری سرور کو مسلم لیگ ن کے حوالے سے ٹاسک دیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق اس ضمن میں وزراء اور دیگر حکومتی شخصیات کو ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ وہ دسمبر کے آخر اور جنوری سے پہلے پی ڈی ایم میں شامل جماعتوں کے رہنماوں سے رابطے کرکے اپوزیشن اتحاد کو اندر سے کمزور کریں ، اس سلسلے میں جو بھی بات چیت کو خواہش مند ہو اس سے ضرور رابطہ کیا جائے۔

دوسری جانب معروف صحافی رانا عظیم کا دعویٰ ہے کہ چند دنوں میں برطانیہ سے آنے والی خبر ن لیگ کی کمر توڑ دے گی ، کوئی بہت بڑی گرفتاری بھی ہو سکتی ہے،لاہور اور برطانیہ سے ایسی خبر آئے گی جو سارا دن ٹی وی پر چلے گی۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے حوالے سے کچھ خبریں گردش کر رہی ہیں کہ پارٹی میں کچھ رہنما ناراض ہیں ، اسی حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے سینئر صحافی رانا عظیم کا کہنا ہے کہ پچھلے تین دن سے مریم نواز خاموش ہیں ،کوئی ایسی بری چیز سامنے نہیں آ رہی،کوئی اہم ملاقات سامنے نہیں آ رہی اور نہ ہی کوئی بڑا بیان سامنے آ رہا ہے ،میری اطلاعات کے مطابق مریم نواز نے ملاقاتوں کا سلسلہ بہت کم کر دیا ہے ،پارٹی کے اہم ترین رہنما بھی ان سے ملنا چاہتے تھے لیکن وہ نہیں ملی ، میری اطلاع کے مطابق مریم نواز بہت پریشان ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں