42

ڈاکٹر ثانیہ نشتر کی زیر صدارت اجلاس ،مختلف امورپر غور

ڈاکٹر ثانیہ نشتر کی زیر صدارت اجلاس ،مختلف امورپر غور
ایس این ایف کمرشلائزیشن 1000دنوں کے مواقع کو بروئے کارلائیگی، ثانیہ نشتر

ڈاکٹر ثانیہ نشتر کی زیر صدارت اجلاس ،مختلف امورپر غور

اسلام آباد
وزیر اعظم کی معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشترنے کہاہے کہ ایس این ایف کمرشلائزیشن 1000دنوں کے مواقع کو بروئے کارلائیگی۔احساس نشوونما اسٹیک ہولڈرز کے ہمراہ مخصوص غذائیت سے بھر پور خوراک کی کمرشلائزیشن پالیسی (ایس این ایف) پر ایک مشاورتی اجلاس کی صدارت کی ۔ اس اجلاس کا مقصد ایس این ایف کی کمرشلائزیشن پر عملدرآمد کے بارے میں تبادلہ خیال کرنا تھا ۔

اجلاس کے دوران ، انضباطی اور مالی رکاوٹوں کا تذکرہ کیا گیا، اس کے علاوہ مینوفیکچر کیلئے سفارشات اور ریٹیل اسٹوروں اور فارمیسیوں پر ارزاں نرخوں پر غذائیت سے بھرپور خوراک کی دستیابی پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔غذائیت احساس کا ایک کثیر الشعبہ جاتی عنصر ہے اور ایس این ایف کی کمرشلائزیشن کو احساس حکمت عملی میں شامل کیاگیا ہے ، اسٹنڈ اور ویسٹڈ بچوں کیلئے سستی قیمت میں غذائیت سے بھرپور خوراک کی دستیابی کو یقینی بنانا پالیسی 65 میں شامل ہے ۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ، ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے کہا کہ ایس این ایف کی کمرشلائزیشن اہم ہے، پاکستان میں کی جانے والی غذائی مطالعے پر لاگت اس بات کی نشاندہی کرتی ہے کہ ملک کی دو تہائی آبادی غذائیت سے بھرپور سستی خوراک کے حصول کی متحمل نہیں ہے لہذا احساس نے سستی ایس این ایف تک آسان رسائی کو یقینی بنانے کیلئے نیشنل کمرشلائزیشن پالیسی تشکیل دینے کی ضرورت کوتسلیم کیا ۔

انہوں نے کہا کہ ایس این ایف کمرشلائزیشن 1000دنوں کے مواقع کو بروئے کارلائے گی اور یہ پاکستان کو در پیش غذائی قلت کے معاشی و سماجی اثرات سے مستقبل طور پر نمٹنے کا ایک واضح طریقہ کار ہے اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ آئندہ اجلاس میں اسٹیک ہولڈرز ایک مربوط تجویز پیش کریں گے جس میں جامع فریم ورک آف ریفرنس، ایس این ایف کی کمرشلائزیشن کا بزنس پلان، مالیاتی اور انضباطی شفارشات، مارکیٹ میں انڈسٹری کے پلیئرز کی تفصیلات اور رسک اور بینیفٹس کے ساتھ ان کی سپریم ایسوسی ایشن شامل ہیں ۔

اس اجلاس میں پاکستان کی وفاقی و صوبائی حکومتوں کے اسٹیک ہولڈرز، ورلڈ فوڈ پروگرام اور دیگر بین الاقوامی ترقیاتی شراکت داروں اور نجی شعبہ کے نمائندگان نے شرکت کی تاکہ مارکیٹ کے تمام شعبوں میں ایس این ایف لانے کیلئے مخصوص عملی اقدامات سمیت ملک میں اس کی کمرشلائزیشن پالیسی فریم ورک کیلئے تکنیکی معلومات فراہم کی جاسکیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں