CORONA 39

کورونا کیسوں میں اضافہ لاہور کے9میں سے6بڑے ٹاﺅنز میں لاک ڈاﺅن کا حکم نامہ جاری

لاہور: پنجاب پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ ڈیپارٹمنٹ نے ایک کروڑ سے زائد آبادی پر مشتمل صوبائی دارالحکومت لاہور کے مختلف مقامات پراسمارٹ لاک ڈاﺅن نافذ کردیا ہے. یہ قدم ایسے وقت میں سامنے آیا جب ایک روز قبل محکمہ صحت پنجاب نے اپیکس کمیٹی پنجاب کے اجلاس میں بتایا تھا کہ کورونا وائرس کی موجودہ صورتحال ویسی جون کی طرح کی ہی ہے جب صوبے میں انفیکشن اپنے عروج پر تھا اسمارٹ لاک ڈاﺅن سے متعلق جاری نوٹیفکیشن میں محکمہ صحت نے کہا کہ گزشتہ 2 ہفتوں کے دوران صوبے میں کووڈ 19 کے پھیلاﺅ اور مثبت شرح میں مسلسل اضافہ ہوا ہے جس نے عوام کی صحت کو سنگین خطرات لاحق کردیے ہیں.
اس صورتحال کو دیکھتے ہوئے لاہور کے9ٹاﺅنزمیں سے6ٹاﺅنز داتا گنج بخش ٹاﺅن، شالیمار ٹاﺅن، سمن آباد، عزیز بھٹی ٹاﺅن اور علامہ اقبال ٹاﺅن میں 55 مقامات پر 21 دسمبر تک اسمارٹ لاک ڈاﺅن نافذ کرتے ہوئے داخلی اور خارجی راستوں کو محدودکردیا گیا ہے محکمہ صحت کی جانب سے ہدایات تب دیکھنے میں آئیں جب 11 اپوزیشن جماعتوں کے اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومںٹ (پی ڈی ایم) اتوار 13 دسمبر کو لاہور میں حکومت مخالف جلسہ کرنے جارہی ہے.
نوٹیفکیشن میں کہا گیا کہ ان علاقوں میں تمام مارکیٹیں، شاپنگ مالز، ریسٹورینٹس، (سرکاری و نجی) دفاتر بند رہیں گے اس کے علاوہ ان علاقوں میں سرکاری اور نجی ٹرانسپورٹ کے ذریعے لوگوں کی نقل و حمل پر مکمل پابندی ہوگی، صرف انتہائی ضرورت کے وقت ایک شخص کو ایک گاڑی میں آنے اور جانے کی اجازت ہوگی. نوٹیفکیشن کے مطابق مذکورہ علاقوں میں کہیں بھی سرکاری و نجی سطح پر سماجی، مذہبی یا کسی دیگر تقریبات پر مکمل پابندی بھی ہوگی علاوہ ازیں کریانے، پھلوں اور سبزیوں کی دکانیں، تندور اور پیٹرول پمس کو ہفتے میں ساتوں دین صبح 9 سے شام 7 بجے تک کھولنے کی اجازت ہوگی.
تمام طبی خدمات، فارمیسیز، لیبارٹریز، کلینکس اور ہسپتال ہفتے میں ساتوں دن 24 گھنٹے کھلے رہ سکیں گے جبکہ دودھ اور گوشت کی دکانوں کو صبح 7 سے شام 7 تک کھلے رکھنے کی اجازت ہوگی واضح رہے کہ صوبے میں اب تک کورونا وائرس کے کیسز کی مجموعی تعداد ایک لاکھ 24 ہزار 191 ہے جس میں سے 3 ہزار 218 انتقال کرچکے ہیں. صرف لاہور کی بات کریں تو یہاں اب تک کورونا وائرس کے کیسز کی تعداد 60 ہزار 755 ہے اور 7 دسمبر کو شہر میں 149 کیسز اور 13 اموات رپورٹ ہوئیں اس کے علاوہ اب تک صوبائی دارالحکومت میں ایک ہزار 282 مریض وہاں انتقال کرچکے ہیں.
یاد رہے کہ پاکستان میں کورونا وائرس کی دوسری لہر میں شدت آرہی ہے اور گزشتہ 24 گھنٹوں میں 89 افراد اس وائرس سے انتقال کرگئے جو 4 جولائی کے بعد سے ملک میں یومیہ اموات کی سب سے زیادہ تعداد ہے.

اپنا تبصرہ بھیجیں