44

گجرنوالہ میں بیوی اور بچوں کو قتل کرنے والے باپ کا بیان سامنے آ گیا بیوی کے غیر مردوں سے مراسم تھے،گذشتہ رات بھی گھر سے غیر مرد کو نکلتے دیکھا تھا جس کے بعد سب کو قتل کرنے کا فیصلہ کیا۔ ملزم عمران کا بیان

گجرنوالہ میں بیوی اور بچوں کو قتل کرنے والے باپ کا بیان سامنے آ گیا
بیوی کے غیر مردوں سے مراسم تھے،گذشتہ رات بھی گھر سے غیر مرد کو نکلتے دیکھا تھا جس کے بعد سب کو قتل کرنے کا فیصلہ کیا۔ ملزم عمران کا بیان

گجرانوالہ میں باپ نے غیرت کے نام پر بیوی اور چار بچوں کو قتل کر دیا۔ملزم نے شوہر اور چار بچوں کو سر میں اینٹیں مار کر قتل کیا۔عمران نامی ملزم نے سر میں اینٹوں کے وار کر کے فوزیہ بی بی اور اپنی تین کمشن بیٹیوں تانیہ، ثانیہ، طابق اور بیٹے عبدالہادی کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔پولیس نے ملزم کو گرفتار کر کے تفتیش شروع کر دی ہے۔
ایس پی سول لائنز اویس شفیق کا کہنا ہے کہ ابتدائی تفتیش میں ملزم عمران نے انکشاف کیا کہ اس کی بیوی فوزیہ کے غیر مردوں سے مراسم تھے۔گذشتہ رات بھی اس نے اپنے گھر سے غیر مرد کو نکلتے دیکھا تھا جس کی وجہ سے اس نے بیوی اور بچوں کو سر میں اینٹیں مار کر قتل کیا اور صبح معمول کے مطابق اپنے کام پر چلا گیا۔
واضح رہے کہ گجرانوالہ میں ماں کو 4 بچوں سمیت ڈنڈوں کے وار کرکے قتل کر دیا گیا تھا ، قتل کا یہ لرزہ خیز واقعہ گجرانوالہ کے علاقے میں تھانہ کینٹ کی حدود ڈوگرانوالہ میں پیش آیا ، جس میں ایک خاتون اور 4 معصوم بچوں کو بے دردی سے قتل کر دیا گیا ، واقعے کے بارے میں پولیس کا کہنا تھا کہ شبہ ہے قتل ہونے والی خاتون قتل ہونے والے بچوں کی ماں ہے ، ماں کو بچوں سمیت بے دردی سے قتل کیا گیا ۔

قتل کا واقعہ رات کے وقت پیش آیا ، اہل محلہ نے خون دیکھ کر پولیس کو اطلاع دی ، قتل ہونے والے بچوں کی عمریں 5 سے 12 سال تھیں ، پولیس کے مطابق واقعے کے وقت خاتون کا شوہر گھر پر موجود نہیں تھا ، بچوں کو الگ الگ لے جا کر قتل کیا گیا ، پولیس نے کیس کی تفتیش کا آغاز کر دیا تھا ، اس سلسلے میں خاتون کے شوہر کو بھی شامل تفتیش کیا گیا تھا جو اب قتل کا اعتراف کر چکا ہے، جب کہ وزیراعلیٰ پنجاب نے بھی گوجرانوالہ میں ماں اور 4 بچوں کے قتل کے واقعے کا نوٹس لیا ، سردار عثمان بزدار نے کہا کہ واقعے میں ملوث ملزمان کسی قسم کی رعایت کے مستحق نہیں ہیں ، وزیراعلیٰ پنجاب نے آر پی او گوجرانوالہ سے واقعے کے حوالے سے رپورٹ طلب کرلی ، سردار عثمان بزدار نے کہا ہے کہ ملزمان کو جلد از جلد کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا ، بتایا گیا ہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب کی طرف سے مقتولین کے لواحقین سے دلی ہمدردی اور اظہار تعزیت بھی کیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں