75

گھر بیٹھے بچوں کی تعلیم کے لیے ’ریڈیو اسکول‘ کے قیام کا فیصلہ

گھر بیٹھے بچوں کی تعلیم کے لیے ’ریڈیو اسکول‘ کے قیام کا فیصلہ
وزارت تعلیم اور ریڈیو پاکستان نے مفاہمتی یادداشت پر دستخظ کردیے ، جس کے تحت ریڈیو اسکول کا آغاز کیا جائے گا جہاں ہر روز 4 گھنٹوں کے لیے تعلیمی مواد نشر ہو گا ، وفاقی وزیر تعلیم کا ٹوئٹ

اسلام آباد : وفاقی حکومت نے گھر بیٹھے بچوں کی تعلیم کے لیے ریڈیو اسکولز کے قیام کا فیصلہ کیا ہے
، مفاہمتی یادداشت پر بھی دستخط ہوگئے۔ سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک پیغام میں وفاقی وز یرتعلیم شفقت محمود نے بتایا کہ وزارت تعلیم اور ریڈیو پاکستان نے
باہمی اشتراک کے لیے ایک مفاہمتی یادداشت پر دستخظ کیے ہیں جس کے تحت ریڈیو اسکول کا آغاز کیا جائے گا جہاں ہر روز 4 گھنٹوں کے لیے تعلیمی مواد نشر کیا جائے گا جو کہ رواں برس مارچ میں شروع کیے گئے ٹیلی اسکول منصوبے کے ساتھ ایک اور ایسا پلیٹ فارم ہوگا جہاں گھر بیٹے تعلیم حاصل کی جاسکے گی

وفاقی وزیرتعلیم شفقت محمود نے ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ان کی وزارت کی طرف سے جلد ہی ای تعلیم پورٹل کا افتتاح کیا جائے گا
، جہاں ای تعلیم کے ذریعے ٹیلی اسکول اور ریڈیو اسکول پروگرام صرف ایک کلک سے دیکھے جاسکیں گے
، کورونا کے دوران ٹیلی اسکول ایجوکیشن کاتجربہ کامیاب رہا ، کیوں کہ کورونا چیلنج میں آن لائن نظام تعلیم کی اہمیت بڑھ گئی ہے
، کورونا کی وجہ سے صرف 15 دنوں میں ٹیلی اسکول منصوبہ لانچ کیا جس میں پاکستان ٹیلی وژن کا تعاون شامل ہے
، ٹیلی اسکول سے 80 لاکھ بچے روز استفادہ حاصل کر رہے ہیں تاہم جن بچوں کی رسائی ٹی وی تک نہیں ہے وہ اب ریڈیواسکول سے فائدہ حاصل کریں گے اس کے ساتھ ساتھ جلد ہی ای تعلیم پورٹل کا افتتاح کرنے جا رہے ہیں جہاں ای تعلیم سے ٹیلی اور ریڈیو اسکول پروگرام صرف ایک کلک سے دیکھے جاسکیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں