MARRYAM NAWAZ 155

یہ رشتہ ہر گزرتے دن کے ساتھ مضبوط ہوگا ، مریم بلاول ملاقات کی کہانی

اسلام آباد : پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری اور ن لیگ کی نائب صدر مریم نواز کی ہونے والی ملاقات کی اندرونی کہانی سامنے آ گئی ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن نے ہمیشہ ساتھ مل کر چلنے اور کسی کی باتوں میں آکر ایک دوسرے کے خلاف تنازعات کھڑے نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔
بلاول اور مریم نے اتفاق کیا کہ اتحاد اور احترام کا یہ رشتہ ہر گزرتے دن کے ساتھ مضبوط ہوگا ۔دونوں جماعتیں ایک دوسرے کے خلاف بیان بازی سے گریز کریں گی۔مریم نواز نے بلاول بھٹو کو بتایا کہ خواجہ آصف نے جب پاکستان پیپلز پارٹی کی قیادت کے خلاف بیان دیا تو میاں محمد نواز شریف نے اس موقع پر نوٹس لیا اور جواب طلب کرتے ہوئے آئندہ اس طرح کے بیانات نہ دینے کی ہدایت کی جس پر بلاول بھٹو نے کہا کہ میاں صاحب کے اس اقدام سے مجھ سمیت پوری جماعت کو حوصلہ ملا۔
ہ مریم نواز اور بلاول بھٹو زرداری کی ملاقات میں حکومت کے خلاف تحریک میں مزیدتیزی لانے کا فیصلہ ہوا جب کہ گرفتاریوں کی صورت میں سخت احتجاج کرنے پر اصولی اتفاق کیا گیا اس کے ساتھ ساتھ ملاقات میں پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم کوانتخابی اتحاد میں بدلنے پر بھی بات چیت کی گئی جب کہ دونوں رہنماوں نے اتفاق کیا کہ پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم پرمشترکہ موقف اپنائیں گی ، دونوں جماعتیں مل کرچلیں گی ، لڑانے والوں کی باتوں میں نہیں آئیں گی جب کہ اتحاد اور احترام کا رشتہ ہرروز مزید مضبوط ہوگا۔
پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے سینئر رہنماؤں مریم نواز اور بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ 31 دسمبر سے پہلے پیپلزپارٹی کے استعفے آجائیں گے، میڈیا کو فیڈ کیا جاتا کہ پی ڈی ایم میں دراڑ پیدا ہوجائے گی، تاریخی لانگ مارچ ہوگا، حکومت مستعفی ہوجائے، بزدل نہیں جیلیں کاٹیں، این آراو نہیں ملے گا۔وہ جاتی امراء میں میڈیا سے گفتگو کررہے تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں