تعلیمی ادارے11 اکتوبر سےمعمول کے مطابق کھولنے کا فیصلہ

پاکستان میں کورونا کی صورتحال پر نظر رکھنے والے ادارے نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر(این سی او سی) نے تعلیمی ادارے معمول کے مطابق کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اس سے قبل تعلیمی اداروں میں حاضری 50 فیصد تھی۔ وفاقی وزیر اسد عمر نے ٹویٹ کیا کہ 11 اکتوبر سے تعلیمی ادارے معمول کے مطابق کھولے جائیں گے۔

وفاقی وزیر کا کہنا ہے کہ کورونا کا پھیلاؤ کم ہو گیا ہے۔ کرونا پھیلاؤ میں کمی کے باعث این سی او سی نے تعلیمی اداروں کو معمول کے مطابق کھولنے کی اجازت دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

تعلیمی اداروں میں کورونا سے بچاو کے احتیاطی تدابیر پر عمل لازمی ہوگا۔ صوبائی اور ضلعی سطح پر مانیٹرنگ ٹیمیں ایس او پیز پر عملدرآمد یقنینی بنائیں گی۔

تعلیمی اداروں میں کورونا سے بچاؤ کیلئے اسپرے کیے گئے ہیں اور احتیاطی تدابیر کے بینرز بھی آویزاں ہیں۔

بیماری کا پھیلاؤ روکنے کے لیے سماجی دوری اپنائی جائے گی۔ اسکول میں بچوں کو ہاتھ دھونے کی ترغیب دی جائے گی اور اس کو یقینی بنانا تعلیمی اداروں ذمہ داری ہوگی۔

بچوں میں کھانسی یا بیماری کی علامات ظاہر ہونے پر والدین انہیں اسکول ہر گز نہ بھیجیں۔ طبیعت زیادہ خراب ہو تو ٹیسٹ کرائیں، کورونا ٹیسٹ مثبت آنے پر فوری اسکول انتظامیہ کو آگاہ کریں۔

کسی بھی شخص کو درجہ حرارت چیک کیے بغیر تعلیمی اداروں میں داخل ہونے نہیں دیا جائے گا۔ بچے کسی سے ہاتھ نہ نہیں ملائیں گے اور اسکول میں جھولا بھی نہیں جھولیں گے۔ محکمہ تعلیم کی مختلف ٹیمیں اسکولوں کا دورہ کریں گی اور ایس او پیز پر عملدرآمد کاجائز لیں گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں