حکومت اور مظاہرین کے مذاکرات کامیاب

حکومت کی مذاکراتی ٹیم اورمظاہرین کے درمیان مذاکرات کامیاب ہو گئے۔

وزیر داخلہ شیخ رشید کا کہنا ہے کہ مذاکرات کامیاب ہوگئے،طے پایا ہے کہ منگل کی شام تک یہ لوگ وہیں رہیں گے۔ جو راستے بلاک ہیں،وہ کھول دیئے جائیں گے۔

مطالبات کا جائزہ لے کر منگل تک معاملہ حل کر لیا جائے گا۔ مظاہرین اس وقت تک پر امن رہ کر اپنا احتجاج ریکارڈ کر وائیں گے۔ وزیر داخلہ شیخ رشید آج معاملے پر پریس کانفرنس میں تمام حقائق سے آگاہ کریں گے۔

حکومتی مذاکراتی کمیٹی کے رکن اور وزیر مذہبی امورنور الحق قادری کا کہنا ہے کہ مظاہرین منگل تک اپنا احتجاج ریکارڈ کراویں گے۔ تمام بند راستوں کو کھول دیا جائے گا۔ پولیس اور مظاہرین کے درمیان کسی قسم کا کوئی ٹکراو نہیں ہوگا۔

ان کا کہنا ہے کہ مظاہرین جدھر ہیں وہاں پرامن احتجاج جاری رکھیں گے۔ حکومت نے مظاہرین کے تمام مطالبات کو سنا ہے۔حکومت مطالبات پر سنجیدگی سے غور اور مشاورت کرےگی۔ مطالبات کی منظوری کے بعد مظاہرین پرامن طور پر احتجاج ختم کر دیں گے۔

مظاہرین کوتمام مطالبات قانون کے مطابق ماننے کی یقین دہانی کر وائی ہے۔ پرامن رہنے پر مظاہرین کے خلاف کارروائی نہیں کی جائے گی۔ معاملات کو باہمی افہام و تفہیم کے ساتھ حل کیا جائے گا۔

واضح رہے کہ لاہور میں مظاہرین کے احتجاج کے پیش نظرراولپنڈی میں انتظامیہ نے سیکورٹی سخت کردی تھی۔ فیض آباد کی طرف جانے والے راستوں، میٹرو روٹ اور مری روڈ پر پولیس کی بھاری نفری تعینات کی گئی تھی۔

اسلام آباد اور راولپنڈی کو ملانے والے راستے اورشہر کے داخلی اور خارجی راستے بھی بند کیے گئے تھے۔ لاہور میں بھی احتجاج کے باعث کئی راستوں پر کنٹینر لگائے گئے تھے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں