تبدیلی کی نشانی، لاڈلہ! آج سپریم کورٹ کا سامنا کر رہا ہے: بلاول بھٹو

اسلام آباد: چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ عوام اس وقت اپوزیشن کی طرف دیکھ رہی ہے۔

ٹی وی ٹوڈے نیوز کے مطابق انہوں نے یہ بات اپنی جانب سے اپوزیشن اراکین سینیٹ و قومی اسمبلی کے اعزاز میں دیے گئے عشائیے سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

عشائیے میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کے مرکزی صدر اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف میاں شہباز شریف سمیت دیگر اپوزیشن جماعتوں کے قائدین و اراکین پارلیمنٹ نے شرکت کی۔

چیئرمین پی پی بلاول بھٹو زرداری نے عشائیے سے خطاب اور ذرائع ابلاغ سے بات چیت میں کہا کہ موجودہ مہنگائی کی وجہ سے عوام کا جینا دوبھر ہو گیا ہے۔

انہوں نے استفسار کیا کہ یہ کس قسم کا نیا پاکستان ہے؟ ان کا کہنا تھا کہ یہ مہنگا پاکستان ہے اور عوام پرانا پاکستان چاہتے ہیں۔

چیئرمین پی پی بلاول بھٹو نے واضح طور پر کہا کہ پاکستان کو بحرانی کیفیت سے نکالنے اور ترقی کی راہ پہ ڈالنے کے لیے اپوزیشن کو مؤثر کردار ادا کرنا پڑے گا۔

ٹی وی ٹوڈے نیوز کے مطابق بلاول بھٹو نے یاد دلایا کہ گزشتہ روز اپوزیشن جماعتوں کے اتحاد و اتفاق کی بدولت ہ حکومت کو ایوان میں شکست ہوئی ہے جو سب کے سامنے ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایک کے بعد ایک نیب آرڈیننس نکلنا بدنیتی ہے، اپوزیشن کے اتحاد پر شکرگزار ہیں، حکومت بھاگنے پر مجبور ہو چکی ہے،عدم اعتماد پر آج بھی وہی رائے ہے، پارلیمنٹ کے اندر اپوزیشن کا اتحاد ایک دن بھی نہیں ٹوٹا۔

چیئرمین پی پی بلاول بھٹو نے کہا کہ پارلیمنٹ میں رہ کر ان کو نقصان پہنچا سکتے ہیں، حکومت کی الٹی گنتی شروع ہو چکی ہے۔

ٹی وی ٹوڈے نیوز کے مطابق بلاول بھٹو نے اپنے خطاب میں کہا کہ تبدیلی کی نشانی ہے کہ لاڈلہ! آج سپریم کورٹ کا سامنا کر رہا ہے۔

عشائیے کے حوالے سے ذمہ دار ذرائع نے ہم نیوز کو بتایا کہ اپوزیشن جماعتوں کے قائدین اور اراکین پارلیمنٹ نے اس امر پر اتفاق کیا کہ اپنی صفوں میں اتحاد پیدا کیا جائے گا اور تمام جماعتیں مل کر حکومت کو ٹف ٹائم دیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں