بڑی آنت کے کینسر کا علاج ممکن

کینسر کا علاج ممکن ہو سکتا ہے اگر بروقت تشخیص ہو جائے، دیگر کینسر کی طرح آنتوں کا کینسر بھی بڑی تعداد میں لوگوں کے جان لینے کا سبب بنتا ہے۔

یورپ کے صرف ایک ملک جرمنی میں ہر سال 60 ہزار مریضوں میں بڑی آنت کے کینسر کی تشخیص ہوتی ہے۔ جن میں ایک تہائی سے زیادہ اس کی وجہ سے موت کے منہ میں چلے جاتے ہیں۔

اس کی ایک وجہ برقت تشخیص نہ ہونا ہے، ڈاکڑز کے مطابق بڑی آنت پر بات کرنا لوگ باعث شرم اور ناخوشگوار موضوع سمجھتے ہیں۔ جس سے سب سے زیادہ نقصان انہیں کو اٹھانا پڑتا ہے۔

ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ بڑی آنت کے کینسر کی خطرناک قسم کے بارے میں جتنی جلدی معلوم ہو جائے، اس کا علاج اتنا ہی آسان ہو سکتا ہے۔ رپورٹ کے مطابق مردوں میں پھیپھڑوں اور پروسٹیٹ کینسر کے بعد بڑی آنت کا کینسر اموات کی تیسری بڑی وجہ بنتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں