“ایک وقت آئیگا، ہمارے پاس افغانستان کے راستے یورپ تک ریلوے ٹریک ہوگا”

پاکستان تا ترکی مال بردار ٹرین سروس کے آغاز کے بعد مسافر ٹرینیں بھی چلانے کا اعلان، ریلوے ٹریک اپ گریڈ کرنے سے طویل مسافت کا فاصلہ آدھا رہ جائے گا

ٹی وی ٹوڈےراولپنڈی:ایک وقت آئیگا، ہمارے پاس افغانستان کے راستے یورپ تک ریلوے ٹریک ہوگا” ، پاکستان تا ترکی فریٹ ٹرین سروس کے آغاز کے بعد مسافر ٹرینیں بھی چلانے کا اعلان، ریلوے ٹریک اپ گریڈ کرنے سے طویل مسافت کا فاصلہ آدھا رہ جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان، ایران اور ترکی کے درمیان مال بردار ٹرین سروس کے آغاز کے حوالے سے وفاقی وزیر ریلوے اعظم سواتی کا کہنا ہے کہ اسلام آباد ، تہران ،استنبول ریلوے روٹ پاکستان کی تاریخ میں اہم سنگ میل ثابت ہو گا۔
وفاقی وزیر برائے ریلوے نے اسلام آباد، تہران، استنبول ریلوے فریٹ سروس کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان ریلوے کی تاریخ کا آج بہت بڑا اور یادگار دن ہے، اسلام آباد، تہران، استنبول کے درمیان مال بردار ٹرین کے بعد مسافر ٹرین بھی چلائیں گے۔
ہم نے اپنے ملک کے تجارت کے راستے کھول دیئے ہیں، امپورٹر اور ایکسپورٹرز کے لیے یہ بہت بڑا موقع ہے ۔

فریٹ ٹرین کے ذریعہ بزنس ٹو بزنس ریلیشن شپ میں اضافہ ہوگا،ریلوے ٹریک اپ گریڈ کرنے سے طویل مسافت کا فاصلہ آدھا رہ جائے گا۔ اس موقع پر مشیر تجارت رزاق داؤد نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ خطے کے ممالک کی ترقی کیلئے ریجنل کنیکٹیوٹی بہت اہم ہے ، ریلوے ٹرانسپورٹیشن تجارت کیلئے بہت اہم ہے ،ایک وقت آئے گا ہمارے پاس افغانستان کے راستے یورپ تک ریلوے ٹریک ہوگا۔ اس موقع پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ٹرین سروس تجارت کیلئے سستا روٹ ہے،ہم جیو پولیٹکس سے جیو اکنامکس کی طرف منتقل ہوچکے ہیں۔ وزیر خارجہ نے اعلان کیا کہ ابھی آغاز ہے ہم مسافر ٹرین بھی شروع کریں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں