ملکہ ترنم نور جہاں کو مداحوں سے بچھڑے اکیس برس بیت گئے

ملکہ ترنم نور جہاں کو مداحوں سے بچھڑے اکیس برس بیت گئے۔ قصور کی اللہ رکھی نے پانچ برس کی عمر میں گانا شروع کیا۔

پنجاب کے شہر قصور میں اکیس ستمبر انیس سو چھبیس میں پیدا ہونے والی اللہ رکھی وسائی فلم انڈسٹری میں نور جہاں کے نام سے مقبُول ہوئی۔ پانچ برس کی عمر میں گانا شروع کیا اور استاد غُلام محمد سے موسیقی کی ابتدائی تعلیم حاصل کی۔ انیس سو پینتیس میں فلم پنڈدی کڑی سے بطور چائلڈ اسٹار اپنے کیریئر کا آغاز کیا۔ اداکاری کے ساتھ ساتھ گلوکاری کے میدان میں بھی بے پناہ شہرت حاصل کی اور مختلف زبانوں میں اٹھارہ ہزار سے زائد گانے گائے۔ انیس سو پینسٹھ کی جنگ میں ان کے گائے ملی نغموں نے فوجیوں میں بجلیاں بھر دی تھیں۔

پاکستان فلم انڈسٹری کی شاید ہی کوئی ایسے ہیروئن ہو جس پر ملکہ نور جہاں کا گایا گیا گانا پیکچرائز نہ ہوا ہو۔

اپنا تبصرہ بھیجیں