قاتل گرفتار نہ ہونے توکچھی کے لوگ کل کو قومی شاہراہ بند کریں گے- سرداریار محمد رند

کوئٹہ: قاتل گرفتار نہ ہونے توکچھی کے لوگ کل کو قومی شاہراہ بند کریں گے ،اطلاعات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی ائی ) کے پارلیمانی لیڈر و رکن بلوچستان اسمبلی سردار یار محمد رند نے کہا ہے کہ 12 نومبر کو کچھی میں پانچ افراد کو قتل کیا گیا لیکن آج تک ملزمان گرفتار نہ ہوسکے

قاتل گرفتار نہ ہونے توکچھی کے لوگ کل کو قومی شاہراہ بند کریں گے یہ بات انہوں نے آج کوئٹہ میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوے کیا،انہوں نے کہا کہ کچھی میں اعوان برادری کے معصوم افراد کو گھر میں گھس کر قتل کیا گیا

جس پر حکومت سے رابطہ کیا گیا مگر کسی نے کچھی واقعے کو کوئی اہمیت ہی نہیں دی۔جس کے خلاف نہ صرف کچھی میں ہڑتال کی گئی بلکہ کل کچھی کے لوگوں نے قومی شاہراہ بند کرنے کااعلان کیا ہے،جس سے کل سندھ بلوچستان قومی شاہراہ پر سفر کرنے والوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا

سردار رند کے مطابق سابق صوبائی وزیر عاصم کرد گیلو کیخلاف ایف آئی آر درج کرنے والے ضلعی افسران کو حکومت نے تبدیل کردیا۔جس کے باعث نصیر آباد اور سبی ڈویژن کے لوگ کل ہڑتال میں مظلوم افراد کا ساتھ دینے پر مجبور ہوچکےہیں

انہوں نے مطابلہ کیا کہ اعوان برادری کے قتل میں ملوث نامز ملزمان کو گرفتار کیا جائے۔سردار رند نے کہا کہ ہم سے سیاسی غلطی ہوئی کہ ہم نے جام کمال کو سپورٹ کیاجبکہ نئی حکومت نے
بلوچستان کو ساڑھے تین سو ارب میں فروخت کیا گیا،پتہ نہیں کہ بلوچستان کو اس طرح نچھوڑا جائے گا۔

انہوں نے بتایا کہ موجودہ وزیر اعلیٰ نے تین ماہ میں ٹرانسفر پوسٹنگ کے علاوہ کچھ نہیں کیا،انہیں بلوچستان کےعوام کی فکر نہیں۔بقول سردار رند کے قدوس بزنجو اسلام آباد میں کیے گئے اپنے وعدوں کو پورا کرنے پر لگے ہوئے ہیں،پی ٹی آئی کے صوبائی پارلیمانی لیڈر نے بااختیار لوگوں سے اپیل ہے،کہ بلوچستان پر رحم کرے پانچ افراد کے قاتلوں کی گرفتاری کےلیے اقدامات کیے جائیں

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے قدوس بزنجو کومخاطب کرتے ہوے کہا کہ اقتدار ہمیشہ نہیں رہے گی،جو کچھ کرناہے سوچ سمجھ کر کرے۔اور قاتلوں کے ساتھ بیٹھنے پر قدوس بزنجو کو صوبائی اسمبلی میں جواب دینا ہوگا۔سردار رند کے مطابق قاتل گرفتار نہیں ہوئے تو اگلی بار کچھی کےعوام ریڈزون میں داخل ہونگے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں