ڈاکٹرفردوس عاشق اعوان کے جان چھڑانے کا پلان:جوابی پلان کا بھی اعلان

تحریک انصاف کا فردوس عاشق اعوان سے جان چھڑوانے کا فیصلہ۔ تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر علی امین گنڈاپور کی جانب سے نجی ٹی وی چینل کو دیے گئے انٹرویو میں کہا گیا ہے کہ تحریک انصاف جلد فردوس عاشق اعوان سمیت کئی رہنماوں کی رکنیت معطل کر دے گی۔ علی امین گنڈاپور نے فردوس عاشق اعوان کو تحریک انصاف کیلئے خطرناک قرار دیتے ہوئے کہا کہ جلد پارٹی ان سے جان چھڑوا لے گی۔

وفاقی وزیر کے مطابق فردوس عاشق اعوان کو کئی مواقع دیے گئے اس کے باوجود وہ ناکام ثابت ہوئیں، اسی لیے انہیں پارٹی سے نکال دیا جائے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ وہ فردوس عاشق اعوان کی اس بات سے اتفاق کرتے ہیں کہ تحریک انصاف کو اندر سے ہی خطرہ ہے

دوسری طرف وزیراعظم کی سابق معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان نے معاشی عدم استحکام کے بعد سیاسی بحران کی پیشگوئی کردی اور ساتھ ساتھ تحریک انصاف میں اندرونی لڑائیوں اور سازشوں کا پردہ بھی چاک کردیا، ان کا کہناتھاکہ میڈل اور ٹرافیاں تو میچ ختم ہونے پر ملتی ہیں،میرے سینے میں بہت سے رازدفن ہیں، میں خان صاحب کی مشکلات بڑھانا نہیں چاہتی۔

نجی ٹی وی چینل کو دیئے گئے خصوصی انٹرویو میں فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ یہ ہماری بدقسمتی ہے کہ معاشی عدم استحکام کے بعد سیاسی عدم استحکام نظر آرہاہے۔ اچانک غائب ہونے بارے سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ کوشش کی ہے کہ بدترین حالات میں بہترین پرفارم کروں لیکن قیادت کو اس وقت شاید بہتر کی تلاش تھی ۔

سازشوں کے پیچھے موجود عناصر بارے ان کاکہنا تھاکہ میں سمجھتی ہوں کہ بہت سارے راز ہیں، جو اس وقت میرے سینے میں دفن ہیں، میں خان صاحب کی مشکلات بڑھانا نہیں چاہتی ، جو ارد گرد لوگ موجود ہیں ، انہوں نے اپنی ناتجربہ کاری اور ذاتی مفادات کی وجہ سے کہیں نہ کہیں پارٹی مفادات کو بھینٹ چڑھا دیا ہے ، مرکز اور پنجاب میں سازشیں کرنے والاایک ہی گینگ اور مائینڈ سیٹ تھا، زیادہ بولنا مقصد نہیں ، سچ بولنا ہے ، پی ٹی آئی کی قیاد ت میں بہت سے لوگ میری پارٹی میں شمولیت کے بھی خلاف تھے ، اب چور سادھ بن کر بیٹھے ہیں۔

دیگر جماعتوں کے رابطے اور پلیٹ فارم سے سیاست کے سوال پر ان کا کہنا تھا کہ دکان میں سودا پڑا ہو تو کوئی نہ کوئی خریدار تو آتا ہی ہے، میرا پلیٹ فارم وہی ہے جہاں ہوں ، وہ عوام ہیں، پاکستان تحریک انصاف کو خطرہ باہر سے نہیں پی ٹی آئی کے اندر سے ہے، اپوزیشن کی پھرتیاں میڈیا کی توجہ حاصل کرنے کی کوششں ہیں۔

ایک اور سوال پر ان کا کہنا تھا کہ انہوں نے وزراء میں پرفارمنس ایوارڈز کی تقسیم کو قبل از وقت قرار دیتے ہوئے کہا کہ میڈل اور ٹرافیاں تو میچ ختم ہونے پر ملتی ہیں، میچ کے دوران نہیں، میں نہیں سمجھتی کہ یہ اتنا ضروری تھا

اپنا تبصرہ بھیجیں