بھارتی پنجاب اور پاکستانی فنکاروں کی مشترکہ فلموں کا پاکستانی سینما گھروں میں راج

بھارتی پنجاب اور پاکستانی فنکاروں کی مشترکہ فلموں نے پاکستانی سینما گھروں میں دھاک بیٹھا لی۔

فلمی شائقین کی بڑی تعداد ان پنجابی فلموں کی دلدادہ ہے، مزاح سے بھرپور اصلاحی پیغامات کی وجہ سے یہ فلمیں شائقین کی اولین ترجیح ہیں۔ گزشتہ اداکار افتخار ٹھاکر، ارمیندر گل کی فلم ”چل میراپت ٹو “ گزشتہ سینما گھروں کی زینت بنی تھی جو ایک ماہ میں پانچ کروڑ سے زیادہ کا بزنس کر چکی اور اب تک زیر نمائش ہے۔

اس کے علاوہ فلم ” حوصلہ رکھ، پانی میں مدھانی، جیسی فلموں کو بھی سینما گھروں میں نمائش کے لئے پیش کیا گیا تھا اور آئندہ ماہ ”چل میرا پت تھری “ کو بھی ملک بھر کے سینما گھروں میں نمائش کے لئے پیش کردیا جائے گا۔

دو روز قبل ایک اور پاکستانی اور بھارتی پنجاب کے فنکاروں پر مشتمل فلم ”اجا میکسیکو چلئے“ کو سینما گھروں میں ریلیز کردیا گیا لاہور میں بھارتی پنجابی فلم کا رنگا رنگ پریمیئر منعقد کیا گیا۔ غیر قانونی طریقے سے بیرون ملک جانے کے خواہشمند افراد پر بننے والی بھارتی پنجابی فلم میں پاکستانی اداکار ناصر چنیوٹی اور ظفری خان شامل ہیں۔

فلم کی کاسٹ میں شامل پاکستانی کامیڈین ناصر چنیوٹی نے نائنٹی ٹو نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ فلم بنا کر محبت کا پیغام دونوں پنجاب کے فنکاروں نے محبت کا پیغام عام کیا ہے اس طرح کی بہترین پروڈکشن میں تیار ہونے والی فلموں میں مزاح کے ساتھ اصلاحی پیغامات بھی شامل ہیں جیسا کہ اس فلم میں غیر قانونی طور پر امریکہ میکسیکو میں داخلے کو دیکھایا گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں