وفاقی وزیر شیریں مزاری کی بیٹی ایمان زینب مزاری کے خلاف بغاوت کا مقدمہ درج

اسلام آباد: اسلام آباد پولیس نے جمعرات کو انسانی حقوق کی کارکن اور وکیل ایمان زینب مزاری کے خلاف بغاوت کا مقدمہ درج کیا، جو وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق شیریں مزاری کی صاحبزادی ہیں، جب انہوں نے نیشنل پریس کلب کے باہر بلوچ طلباء کے احتجاج میں شرکت کی۔

ذرائع کے مطابق سینکڑوں بلوچ طلباء نے پریس کلب کے باہر دھرنا دیا۔ ایمان مزاری اور رکن قومی اسمبلی محسن داوڑ بھی دھرنے میں شامل ہوئے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ انہیں منتشر کرنے کے لیے اسلام آباد پولیس نے مظاہرین پر لاٹھی چارج کیا۔

اسلام آباد پولیس نے ذرائع کو بتایا کہ مزاری، داوڑ اور سیکڑوں بلوچ طلباء کے خلاف بغاوت، ہنگامہ آرائی اور ریاست مخالف نعرے لگانے پر بغاوت کا مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

ذرائع نے بتایا کہ ملزمان کے خلاف اسلام آباد کے کوہسار پولیس اسٹیشن میں فرسٹ انفارمیشن رپورٹ (ایف آئی آر) درج کر لی گئی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں