ریکارڈ ٹیکس جمع ہونے کی وجہ سے پٹرول اور بجلی کی قیمتیں کم کیں، وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان کہتے ہیں کہ ریکارڈ ٹیکس جمع ہونے کی وجہ سے پٹرول اور بجلی کی قیمتیں کم کیں۔

سوموار کے روز احساس رعایت راشن پروگرام کی افتتاحی تقریب سے خطاب میں کہا مہنگائی صرف پاکستان کا نہیں دنیا بھر کا مسئلہ ہے، پاکستان اب بھی دنیا کے سستے ممالک میں شامل ہے۔

اُنہوں نے کہا کہ انسانیت کا درد رکھنے والا ہی فلاحی کام کرسکتا ہے، کمزور طبقے کی مدد کرنا ریاست کی ذمہ داری ہے۔ احساس پروگرام کی کامیابی پر ڈاکٹر ثانیہ نشتر کو مبارک باد پیش کرتا ہوں۔

وزیراعظم نے کہا کہ کورونا کے دوران مجبور لوگوں کی مدد کی، خوراک کی کمی سے بچوں کی صحیح نشوونما نہیں ہوتی۔ اللہ کا شکر ہے کہ ریکارڈ ٹیکس جمع ہوا، وعدہ کرتا ہوں جتنا ٹیکس جمع ہوگا لوگوں پر خرچ کروں گا۔

عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ اس ماہ کے آخر تک ہر خاندان کو ہیلتھ انشورنس کارڈ مل جائے گا، صحت کارڈ سے غریب افراد بھی پرائیویٹ اسپتالوں سے علاج کرواسکتے ہیں۔ صحت کارڈ ہماری حکومت کا سب سے بڑا کارنامہ ہے۔ امیرترین ممالک میں بھی تمام افراد کو مفت ہیلتھ انشورنس نہیں ملتی۔

وزیراعظم کے غربت کے خاتمے کے وژن کے تحت دو کروڑ خاندانوں کو ہر ماہ روزمرہ استعمال کی اشیا پر 30 فیصد اعانت فراہم کی جائے گی۔ ٹارگٹڈ سبسڈی پروگرام سے آٹا، پکانے کا تیل گھی اور دالوں جیسی اشیا خوردونوش کی قیمتیں موثر طور پر کم ہو جائیں گی۔ پروگرام کے تحت دو کروڑ مستحق خاندانوں میں ایک سوچھ ارب روپے تقسیم کئے جائیں گے۔ احساس کفالت سکیم کے تحت اکہتر ارب روپے کا ”کفالت کیش امدادی پروگرام” بھی شروع کیا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں