لڑاکا طیارہ جے 10 سی کی پاک فضائیہ میں شمولیت کی تقریب

لڑاکا طیارہ جے 10 سی کی پاک فضائیہ میں شمولیت کی تقریب ہوئی۔ یہ چین کا جدید ترین سنگل انجن لڑاکا طیارہ ہے۔

جے 10 سی ایف 16 سے کہیں زیادہ جدید اور بہتر ہتھیاروں پر مشتمل ہے۔ جے 10 سی میں پی ایل 15 میزائل نصب ہوتے ہیں جو 200 کلومیٹر دور تک ہدف کو نشانہ بنا سکتا ہے۔ جے 10 سی میں جدید ترین رڈار نصب ہے جو ایک ہی وقت میں کئی اہداف کو ٹریک کر سکتا ہے۔ جے 10 سی ہر موسم میں ہر طرح کے حملے کیلئے کارگر ہے۔

جدید فائٹر ایئر کرافٹ جے ٹین سی پاکستان ایئر فورس میں شامل کر لئے گئے ہیں۔ وزیر اعظم عمران خان ، وفاقی وزراء، عسکری حکام سمیت چینی سفیر نے تقریب میں شرکت کی۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ جے ٹین سی کی پاکستان ایئرفورس میں شمولیت پر قوم کو مبارک باد دیتا ہوں۔ جے ٹین سی کی شمولیت سے ملک دفاعی صلاحیت مزید مضبوط ہو گی۔ بالا کوٹ میں پاکستان نے جو جواب دیا وہ پوری دنیا نے دیکھا۔ ہمیں اپنی مسلح افراد پر فخر ہے۔

ایئر چیف مارشل ظہیر احمد بابر سدھو نے کہا کہ پاکستان اور چین آزمائے ہوئے دوست ممالک ہیں۔ خطے میں امن کیلئے چین کیساتھ مل کر کام کر رہے ہیں۔ پاکستان اور چین کے درمیان مضبوط برادرانہ تعلقات ہیں۔ ہم ایک چیلنجنگ دور میں رہ رہے ہیں۔

سربراہ پاک فضائیہ کا مزید کہنا تھا کہ خطے میں امن کیلئے پاک چین تعاون مثالی ہے ۔ پاک فضائیہ وطن کے دفاع کیلئے پرعزم ہے۔

وزیر دفاع نے بھی جے ٹین سی پر چڑھ کر طیارے کا معائنہ کیا۔ وزیر اطلاعات فواد چودھری نے طیارے کے ساتھ تصاویر کھنچوائیں۔ وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے بھی طیارے میں بیٹھ کر معائنہ کیا۔ چینی وفد نے بھی اس موقع پر پاکستانی حکام کو مبارک باد پیش کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں