پارلیمنٹ لاجز میں انصار السلام کے داخلے کا معاملہ، جمعیت علما اسلام کے کارکنان کیخلاف مقدمہ درج

پارلیمنٹ لاجز میں انصار السلام کے داخلے کے معاملے پر تھانہ سیکرٹریٹ میں جمعیت علما اسلام کے کارکنان کیخلاف مقدمہ درج کر لیا گیا۔

مقدمہ میں 18 افراد نامز جبکہ 25 سے تیس افراد نامعلوم بھی شامل ہیں۔ مقدمے میں کار سرکار مداخلت، ہجوم اکھٹا کرکے بلوا کرنے کی دفعات شامل کی گئیں ہیں۔

مقدمہ میں کہا گیا ہے کہ انصار السلام کے کارکنوں نے جھتے کی صورت میں ریڈ زون میں زبردستی داخل ہو کر پارلیمنٹ کے سامنے ریہرسل کرکے دفعہ 144 کی خلاف ورزی کی۔ انصار الاسلام کی پارلیمنٹ لاجز میں موجودگی سے لاجز کی سیکورٹی غیر موثر ہو چکی تھی۔ پارلیمنٹیرین کو خطرہ لاحق ہو سکتا تھا۔

دوسری جانب دو اراکین اسمبلی سمیت تمام گرفتار کارکنوں کو شخصی ضمانت پر رہا کردیا گیا گیا ہے۔ کارکنوں کی رہائی پر مولانا نے احتجاج کی کال بھی واپس لے لی۔ مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ کارکن پرامن رہیں، احتجاج کی اب ضرورت نہیں۔

یاد رہے کہ اسلام آباد پولیس نے گزشتہ رات پارلیمنٹ لاجز میں جے یو آئی ف کے دو ارکان اسمبلی اور 15 کارکنان کو حراست میں لیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں