کینیڈا، مسی ساگا شہر کی مسجد میں ایک شخص کلہاڑی لے کر گھس گیا

اوٹاوا کینیڈا میں نسل پرستی کا ایک اور واقعہ پیش آیا۔ فجر کی نماز کے دوران مسی ساگا شہر کی مسجد میں ایک شخص کلہاڑی لے کر گھس گیا۔

ملزم نے نمازیوں پر مرچوں کا سپرے بھی کیا۔ نمازیوں نے ملزم کو کلہاڑی سمیت پکڑ کر پولیس کے حوالے کر دیا۔ امام مسجد کا کہنا ہے خوش قسمتی سے ملزم کو کلہاڑی چلانے کا موقع نہیں مل سکا۔ کینیڈا میں اسلامو فوبیا اور نسل پرستی بہت زیادہ ہے۔

پولیس نفرت پر مبنی جرائم سمیت تمام محرکات پر غور کر رہی ہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں