قوالی کے بے تاج بادشاہ معروف قوال غلام فرید صابری کو بچھڑے 28 برس بیت گئے

قوالی کے بے تاج بادشاہ معروف قوال غلام فرید صابری کو مداحوں سے بچھڑے 28 برس بیت گئے۔ مگر ان کی قوالیاں آج بھی لوگوں کو یاد ہیں۔

قوالی کے فن کوبام عروج تک پہنچانے والے حاجی غلام فريد صابری انیس سو تیس میں ہندوستان میں پیدا ہوئے اور 1946ء ميں پہلی دفعہ مبارک شاہ کے عرس پر ہزاروں لوگوں کے سامنے قوالی پڑھی جسے سننے والوں نے بے حد سراہا اور دیکھتے ہی دیکھتے اس عظیم فنکار نے دنیا کو اپنا گرویدہ بنا لیا۔

70 اور 80 کی دھائی میں غلام فرید صابری اور ان کے بھائی مقبول صابری کی جوڑی کا کوئی ہم پلہ نہ تھا۔

غلام فرید صابری جب محفل سماع سجاتے تو سننے والون پر سحر طاری ہوجاتا۔ ان کی قوالیاں پاکستانی اور بھارتی فلموں کا حصہ بھی بنیں۔ انہیں 1994ء میں صدارتی ایوارڈ سے بھی نوازا گیا۔

5 اپریل 1994ء کو قوالی کی دنیا کا یہ روشن ستارہ اپنےمداحوں کو چھوڑ کر دنیائے فانی سے کوچ کرگیا لیکنآج بھی قوالی کا ذکر غلام فرید صابری کے ذکر کے بنا ادھورا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں