پنجاب اسمبلی کا اجلاس چھ اپریل کی بجائے سولہ اپریل تک مؤخر

پنجاب اسمبلی کا اجلاس چھ اپریل کی بجائے سولہ اپریل تک مؤخر ہو گیا۔ ڈپٹی اسپیکر نے منظوری دے دی۔

ذرائع کے مطابق ہنگامہ آرائی میں ملوث اپوزیشن کے پندرہ سے بیس افراد کی رکنیت معطل کرنے پر غور کیا جارہا ہے۔ فیصلہ اسپیکر کی قائم کردہ کمیٹی کی رپورٹ پر ہو گا۔

ذرائع کے مطابق ایوان اور لابی میں ٹوٹ پھوٹ اور سامان کی مرمت کے لئے اجلاس تاخیر کا شکار ہوا۔ پنجاب اسمبلی کا اجلاس 16 اپریل 2022، ساڑے 11 بجے تک ملتوی کیا گیا۔

ادھر پنجاب اسمبلی میں وزیراعلی پنجاب کے انتخاب کیلئے تحریک انصاف نے پارٹی ارکان پنجاب اسمبلی کو نوٹس جاری کر دیئے۔ نوٹس پارٹی سیکرٹری جنرل اسد عمر کی طرف سے جاری کئے گئے ۔ وزیراعلی پنجاب کے انتخاب میں پارٹی امیدوار چوہدری پرویز الہی کو ووٹ دینے کا پابند کر دیا۔

نوٹس کے متن میں کہا گیا پارٹی چیئرمین عمران خان نے چوہدری پرویز الہی کو وزیراعلی کے لئے امیدوار نامزد کیا ہے ۔ پارٹی کے تمام ارکان اسمبلی چوہدری پرویز الہی کو ووٹ دیں ۔ غیر حاضری بھی ڈسپلن کی خلاف ورزی تصور ہو گی ۔ الیکشن کے روز غیر حاضر رہنا یا خلاف ووٹ دینے پر آرٹیکل 63 اے کے تحت کارروائی ہو گی ۔

ذرائع کے مطابق خلاف ورزی پر منحرف ارکان کے خلاف ریفرنس دائر کیئے جائیں گے۔ منحرف ارکان کی حمزہ شہباز کے ساتھ پریس کانفرنس اورملاقاتوں کا ریکارڈ اکٹھا کر لیا گیا۔ ایوان میں اپوزیشن بنچوں پر بیٹھنے کی فوٹج بھی ریکارڈ کا حصہ بنالی گئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں