طالبان حکومت پاک افغان سرحدی علاقے کو محفوظ بنائے، پاکستان

پاکستان نے طالبان حکومت سے پاک افغان سرحدی علاقے کو محفوظ بنانے کا مطالبہ کردیا۔

پاکستان کی جانب سے افغانستان کی سرزمین سے ملک میں دہشت گرد کارروائیوں کی شدید مذمت کی گئی۔ اتوار کے روز پاک افغان سرحد پر حالیہ واقعات کے حوالے سے صحافیوں کے سوالوں کے جواب میں دفتر خارجہ کے ترجمان عاصم افتخار نے کہا کہ پاکستان کے اندر کارروائیاں جاری رکھنے کے لئے دہشت گرد افغان سرزمین کا کھلم کھلا استعمال کررہے ہیں۔

اُنہوں نے کہا کہ اس سے پاک افغان سرحد پر امن و استحکام قائم رکھنے کے حوالے سے ہماری کوششوں کو نقصان پہنچے گا۔

ترجمان نے کہا کہ پاکستان اور افغانستان گزشتہ کئی ماہ سے ادارہ جاتی ذرائع سے اپنی طویل مشترکہ سرحد پر موثر رابطے اور سکیورٹی کے لئے کوششیں کررہے ہیں۔

اُن کا کہنا تھا کہ بد قسمتی سے سرحدی علاقے میں تحریک طالبان پاکستان سمیت کالعدم دہشت گرد گروہوں سے وابستہ عناصر نے پاکستان کی سرحد پر سکیورٹی چوکیوں پر حملے جاری رکھے ہوئے ہیں جس کے نتیجے میں کئی پاکستانی فوجی شہید ہوئے ہیں۔

عاصم افتخار نے کہا کہ پاکستان افغانستان کی خود مختار حکومت سے مطالبہ کرتا ہے کہ وہ دونوں برادر ملکوں کے امن اور خوشحالی کےلئے پاکستان میں دہشت گرد حملوں میں ملوث افراد کے خلاف سخت کارروائی کرے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں