وزیر اعلی نے ایڈووکیٹ جنرل پنجاب احمد اویس کو عہدے سے ہٹانے کی منظوری دے دی

وزیر اعلی حمزہ شہباز نے ایڈووکیٹ جنرل پنجاب احمد اویس کو عہدے سے ہٹانے کی منظوری دے دی۔

ذرائع کے مطابق منظوری کے بعد ایڈوکیٹ جنرل کو عہدے سے ہٹانے کی سمری گورنر پنجاب کو بھیجوا دی گئی۔

قبل ازیں ایڈووکیٹ جنرل پنجاب احمد اویس کو کام سے روک دیا گیا تھا ۔ محکمہ قانون اور پارلیمانی اُمور نے مراسلہ جاری کیا تھا جس کے مطابق احمد اویس کسی عدالت میں پنجاب حکومت کی نمائندگی نہیں کر سکتے تھے۔ مراسلے کے متن کے مطابق ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کی ذمہ داری صوبائی حکومت کی نمائندگی کرنا ہے۔ صوبائی حکومت کی عدم موجودگی میں ایڈوکیٹ جنرل عدالت میں پیش نہیں ہو سکتے۔ صوبائی حکومت کے فعال نہ ہونے سے پیچیدگیاں بڑھ رہی ہیں، درخواست ہے کہ ایسے کیسز میں آپ پیش نہ ہوں۔

تاہم پنجاب اے جی نے اپنا عہدہ چھوڑنے سے انکار کر دیا تھا، کہا تھا جب تک گورنر کام کرنے سے باز نہیں کرتے وہ کام کرتے رہیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں